اخلاقیات اور کاروباری عوامل کی وضاحت:

کمپنی کی سالمیت اور وقار کو برقرار رکھنے کے لیے سجاد ٹیکسٹائل ملز کا ہر ورکر خواہ وہ ڈائریکٹر ہو یا کوئی سٹاف ممبر، کمپنی کے تشکیل کردہ کوڈ آف ایتھکس کا علمبردار ہے، جس کی تفصیل مندرجہ ذیل ہے:

۱۔ مفادات کا تصادم: کمپنی امید کرتی ہے کہ مینیجمنٹ اور ورکرز کسی بھی ایسی ایکٹیوٹی میں اپنے آپ کو ملوث نہیں کریں گے جو اُن کے ذاتی اور کمپنی کے مفادات کے درمیان تصادم کا باعث بنے جیسا کہ ہر ٹرانزیکشن تنظیم کے مفاد میں ہو نہ کہ کسی ڈائریکٹر یا سٹاف ممبر کے حق میں۔ مزید یہ کہ سٹاف ممبران کو کمپنی کی حدود میں اپنے کسی بھی قسم کے ذاتی کاروبار کی اجازت نہیں ہوگی اور نہ  اس مقصد کے لیے کمپنی کی سہولیات کو بروئے کارلانے کی اجازت ہوگی۔ اگر کسی بھی ورکر کا اُس تنظیم کے ساتھ (جس کے ساتھ سجاد ملز کا تعلق ہے) بلواسطہ یا بلاواسطہ تعلق ہو تو اِسے کمپنی کی توجہ میں لایا جائے۔

۲۔رازداری: کمپنی کے تمام اراکین سے مطلوب ہے کہ وہ کمپنی کی تمام ترنجی، کاروباری اور دیگر اہم معلومات کو خفیہ رکھیں چاہے وہ کمپنی میں رہیں یا نہٰ رہیں اور اسوقت تک راز افشاں نہ کریں جب تک کہ قانونی عدالت اُن سے تفتیش نہ کرے۔

۳۔خفیہ ذاتی دستگیری: تمام ملازمین کے لیے کسی بھی تنظیم، جو کہ سجاد ٹیکسٹائل ملز کے ساتھ کاروباری مراسم رکھتی ہو، سے کسی بھی قسم کے تحائف، فیوریا غیر قانونی پیسہ لینا ممنوع ہے اور اگر یہی فیور کمپنی کے مفاد میں ہو تو مینیجمنٹ کو اس بارے میں بالکل واشگاف الفاظ میں بتایا جائے۔

۴۔ درست انداز میں ریکارڈ رکھنا: اکاؤنٹس کے کھاتوں میں تمام فنڈز، رسیدیں اور خرچ کی فراہمی کو مناسب طریقے سے درج کیا جانا چاہیے۔ کسی بھی قسم کے غلط یا فرضی اندراج اور گمراہ کن بیانات کو شامل کرنے سے احتراز کیا جانا چاہیے جو کہ کمپنی کی کاروائیوں کو نقصان پہنچانے والے ہوں۔ ایجنٹوں، ڈیلروں اور کنسلٹنٹنس کے ساتھ کیے جانے والے معاہدے تحریری صورت میں مطلوبہ ثبوت کے ساتھ ہونے چاہئیں۔

۵۔ سرکاری حکام، ایجنٹوں اور سپلائرز کے ساتھ تعلق: سرکاری حکام، سپلائرز، ایجنٹوں، خریداروں اور مشیروں کے ساتھ کمپنی کا لین دین اس نوعیت کا ہونا چاہیے کہ کمپنی کی سالمیت اور ساکھ پر کبھی کوئی سوال نہ اُٹھ سکے۔ کمپنی کی مینجمنٹ اس حوالے سے اپنے تمام ملازمین کی رہنمائی کرنے کے لیے حاضر ہے۔

۶۔ صحت اور حفاظتی تدابیر: تمام ملازمین امید کی جاتی ہے کہ وہ نہ صرف اپنی صحت اور حفاظت کا خیال رکھیں گے بلکہ اپنے ساتھ کام کرنے والوں کا بھی اُسی طرح خیال رکھیں گے جو کہ اُن کے ساتھ اپنی خدمات سرانجام دینے میں مصروفِ عمل ہیں۔ اسی نقطے کے پیش نظر کمپنی اپنے تمام ورکرز کی سرکاری قوانین کے مطابق بیمہ کروانے کی ذمہ دار ہے۔

۷۔ ماحول: کمپنی کے ماحول کی حفاظت اور سازگاری کے لیے مینیجمنٹ اور ملازمین بذاتِ خود ذمہ دار ہیں۔ اُن کو کمپنی کی سہولیات استعمال کرتے ہوئے ماحول کو مزید بہتر بنانے کے لیے مناسب طرزِ عمل اختیار کرنے کی بھرپور اجازت ہے جو کہ نہ صرف اُن کے صحت مندانہ تصور کو فروغ دے گا بلکہ اُن سے ملحقہ کمیونیٹیز کے مفاد میں بھی ہوگا۔

۸۔ جوا؍ شراب ؍ منشیات: کام کرنے والی جگہ پر ہر قسم کا جُوا، ممنوعہ منشیات، شراب اور غیر قانونی مواد کی دیگر اقسام کے استعمال میں ملوث ہونے کے بالکل بھی اجازت نہٰیں ہے۔ ان قوانین کی خلاف ورزی کرنے والا ملازم قانون کے تحت تادیبی یا تعزیری کاروائی کا شکار ہوسکتا ہے۔